46

شطرنج کھیلنے والے ایک روبوٹ نے اپنے مخالف کھیلنے والے 7سالہ بچے کی انگلی توڑ ڈالی



شطرنج کھیلنے والے ایک روبوٹ نے اپنے مخالف کھیلنے والے 7سالہ بچے کی انگلی توڑ …

ماسکو(مانیٹرنگ ڈیسک) روس میں شطرنج کھیلنے والے ایک روبوٹ نے اپنے مخالف کھیلنے والے 7سالہ بچے کی انگلی توڑ ڈالی۔” ڈیلی پاکستان گلوبل” کے مطابق یہ ایک مصنوعی بازو تھا جسے کمپیوٹرسے منسلک کیا گیا تھا اور یہ خودکار طریقے سے شطرنج کے مہرے اٹھا کر ایک سے دوسری جگہ رکھتا تھا۔ 

ماسکو میں ہونے والی شطرنج اوپن چیمپیئن شپ میں ایک جگہ یہ روبوٹ کھلاڑی بھی رکھا گیا تھا , اس سے ایک 7سالہ بچے نے کھیلنا شروع کر دیا۔ کھیل کے دوران اچانک روبوٹ نے بچے کی انگلی پکڑ لی اور اس زور سے دبائی کہ انگلی کی ہڈی ٹوٹ گئی۔بتایا گیا ہے کہ اس حادثے میں غلطی بچے کی تھی، بچے نے اپنی چال چلنے کے بعد اپنا ہاتھ روبوٹ کے قریب کر دیا تھا جس نے مہرے کی جگہ اس کی انگلی پکڑ کر دبا دی۔

اس واقعے کی ایک ویڈیو بھی منظرعام پر آئی جس میں دیکھا جا سکتا ہے کہ جب روبوٹ بچے کی انگلی پکڑ کر دباتا ہے تو بچہ درد سے چیخنے لگتا ہے۔ اس پر ایک خاتون اور کچھ مرد دوڑ کر آتے ہیں اور اسے روبوٹ کی گرفت سے آزاد کراتے ہیں۔ماسکو شطرنج فیڈریشن کے سربراہ سرگئی لیزاریف نے اس واقعے پر افسوس کا اظہار کرتے ہوئے بتایا  کہ بچے نے جلدبازی کی، اگر بچہ غلطی نہ کرتا تو ممکنہ طور پر واقعہ پیش نہ آتا کیونکہ یہ مشین اس سے پہلے کئی کھلاڑیوں کے مقابل کھیل چکی ہے اور آج تک ایسا کوئی واقعہ پیش نہیں آیا۔ 

واضح رہے کہ کرسٹوفر نامی یہ بچہ پورے روس کے 30بہترین نوعمر کھلاڑیوں میں سے ایک ہے۔ وہ کئی مرتبہ ’انڈرنائن‘ کیٹیگری میں اپنے کھیل کا مظاہرہ کر چکا ہے۔ کرسٹوفر انگلی ٹوٹ جانے کے باوجود اگلے دن واپس آیا اور اپنا کھیل مکمل کیا۔ تاہم کرسٹوفر کے والدین نے روبوٹ بنانے والی کمپنی اور فیڈریشن کے خلاف قانونی چارہ جوئی کا اعلان کر دیا ہے۔

مزید :

بین الاقوامی –




اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں