16

سپین میں 14 گھنٹے کام اور پھر 400 یورو سے کم تنخواہ  دینے والا پاکستانی دکان  مالک گرفتار کرلیاگیا



سپین میں 14 گھنٹے کام اور پھر 400 یورو سے کم تنخواہ  دینے والا پاکستانی دکان  …

بارسلونا(ارشد نذیر ساحل ) سپین نیشنل پولیس نے  گزشتہ دنوں تراسامیں ایک سپرمارکیٹ پر چھاپہ مار کر ہم وطن کا استحصال کرنے والے پاکستان دکاندار کو گرفتار کرلیا۔پولیس کے مطابق متاثرہ شخص ہفتے میں 7 دن کام کرتا تھاجبکہ ماہانہ 200 سے 400 یورو تنخواہ ادا کی جارہی تھی۔ دکان پر کام کرنے والا شخص سپین میں غیرقانونی طور پر مقیم ہے۔

نیشنل پولیس اور لیبر انسپکشن ٹیم نے چھاپہ مارا تو دکان پر کام کرنے والے شخص نے دکان کا ملازم ہونے سے انکار کیا تاہم گاہکوں سے رقم کی وصولی وہی کررہاتھا۔ متاثرہ شخص کم ازکم 9 مہینوں سے سپر مارکیٹ پر کام کررہاتھا۔ پولیس نے کہاہے کہ دکان مالک متاثرہ شخص کی مجبوری سے فائدہ اٹھارہاتھا۔

دکان پر کام کرنے والا شخص سپین میں غیر قانونی طور پر مقیم ہے کیونکہ اس کے خاندان کا کوئی بھی فرد سپین میں نہیں ہے۔ گرفتار مالک مکان عدالت میں بیان کے بعد رہا ہوگیا تھا۔

مزید :

بین الاقوامی –




اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں