24

سسر نے بیٹی کو ہراساں کرنے اور تشدد کا نشانہ بنانے والے داماد کی جان لے لی 



سسر نے بیٹی کو ہراساں کرنے اور تشدد کا نشانہ بنانے والے داماد کی جان لے لی 

نئی دہلی(مانیٹرنگ ڈیسک) بھارت میں ایک مسلمان سسر نے بیٹی کو تشدد کا نشانہ بنانے پر اپنے ہندو داماد کو گلہ کاٹ کر موت کے گھاٹ اتار ڈالا۔ انڈیا ٹوڈے کے مطابق ریاست آندھرا پردیش کے ضلع چتور کے رہائشی یوسف خان نے اپنی بیٹی حسینہ کی شادی 10سال قبل ایک ہندو شخص سائیں بابا کے ساتھ کی تھی۔ کئی سال سے سائیں بابا حسینہ کوتشدد کا نشانہ بناتا آ رہا تھا اور کچھ عرصے سے حسینہ اپنے والدین کے پاس رہ رہی تھی جس کے بعد بھی اس نے پیچھا نہیں چھوڑا اور ہراساں کر تا رہا۔

رپورٹ کے مطابق گزشتہ روز سائیں بابا اپنی اہلیہ حسینہ کو واپس گھر لیجانے کے لیے سسرال گیا۔ وہ جب سسرال پہنچا تو شراب کے نشے میں دھت تھا اور اس نے جاتے ہی سسرالیوں کے ساتھ جھگڑا شروع کر دیا۔ جب جھگڑا حد سے بڑا تو یوسف خان نے اس پر تیز دھار آلے سے حملہ کر دیا اور اس کا گلہ کاٹ کر اسے موت کے گھاٹ اتار ڈالا۔ ملزم کے خلاف مقدمہ درج کر لیا گیا ہے اور پولیس تفتیش کر رہی ہے۔

مزید :

بین الاقوامی –




اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں