32

ملک میں گندم کی قلت نہیں اگلی کٹائی تک موجودہ ذخیرہ کافی ہے این ایف آر سی سی کا دعویٰ



ملک میں گندم کی قلت نہیں ، اگلی کٹائی تک موجودہ ذخیرہ کافی ہے، این ایف آر سی …

اسلام آباد (ڈیلی پاکستان آن لائن )نیشنل فلڈ رسپانس کو آرڈی نیشن سینٹر  نے ملک میں غذائی اجناس کی موجودہ صورتحال کے حوالے سے رپورٹ جاری کر دی ہے، این ایف آر سی سی کے مطابق ملک میں گندم کی قلت نہیں ہے، ملک میں موجود گندن کا ذخیرہ اگلی کٹائی تک کافی ہے۔ 

نجی ٹی وی  “ایسکپریس نیوز ” کے مطابق این ایف آر سی سی کا کہنا ہے کہ ملک میں خوراک اور غذائی اجناس کا وافر ذخیر ہ موجود ہے ، ذخیرے کو مزید بڑھانے کیلئے اقدامات کیے گئے ہیں،ملک میں 1.8ملین ٹن گندم کے اضافی سٹاک کی درآمد کی جا رہی ہے،پبلک سیکڑ سے 46ہزار ٹن گندم روزانہ کی بنیاد پر جاری کی جارہی ہے، گزشتہ سال ٹماٹر کی بمپر کاشت کی گئی جو ضرورت کیلئے کافی ہے، 7.5ملین ٹن آلو کی فصل ہوئی جبکہ ملک کی ضرورت 4.2ملین ٹن ہے۔

رپورٹ کے مطابق ایران اور افغانستان سے پیاز اور آلو کی درآمد جاری ہے، ملک میں پیاز اور ٹماٹر کی ضرورت 1.5لاکھ ٹن ہے ،

55ہزار ٹن سے زیادہ ٹماٹر ، 6ہزار ٹن پیاز پاکستان پہنچ چکا ہے،مسور اور ماش کی دال کی درآمد کینیڈا ، آسٹریلیا اور میانما رسے جاری ہے،مونگ کی دال پہلے ہی سر پلس میں تھی، دال چنا کی 8لاکھ ٹن سالانہ ضرورت ہوتی ہے،دال چنا کی 65فیصد درآمد آسٹریلیا سے کی جا رہی ہے،چاول کی ضرورت دسمبر تک دستیاب سٹاک سے پوری کی جا سکتی ہے، چاول کی اگلی کٹائی کا سیزن اکتوبر میں شروع ہو گا، پاکستان چاول 9.7ملین ٹن پیدا کر رہا ہے،تاہم کل کھپت 3.8ملین ٹن ہے ۔ 

نیشنل فلڈ رسپانس کو آرڈی نیشن سینٹر  کے  مطابق پاک فوج کی متاثرہ علاقوں میں امدادی سرگرمیاں جاری ہیں، 24گھنٹوں میں 10پروازوں کے ذریعے متاثرین کو 14.7ٹن راشن پہنچایا گیا ، سندھ ، جنوبی پنجاب ، بلوچستان میں پاک فوج کے 147 ریلیف سنٹر کام کر رہے ہیں۔

مزید :

اہم خبریں -قومی –




اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں