38

بھارت میں برہنہ تصاویر وائرل کرنے پر لڑکی نے منگیتر کی جان لے لی – ایکسپریس اردو

منگیتر کے ہاتھوں قتل ہونے والا ویکاس پیشے کے اعتبار سے ڈاکٹر ہے، فوٹو: بھارتی میڈیا

بنگلور: بھارتی ریاست تمل ناڈو میں لڑکی نے سوشل میڈیا پر برہنہ تصاویر وائرل کرنے پر اپنے منگیتر ڈاکٹر ویکاس راجن کو دوستوں کی مدد سے قتل کردیا۔

بھارتی میڈیا کے مطابق جواں سال ڈاکٹر ویکاس راجن کی دو سال قبل سوشل میڈیا پر ایک لڑکی سے بات چیت ہوئی اور جلد دونوں ایک دوسرے کی محبت میں گرفتار ہوگئے۔ جلد ہی دونوں کی شادی بھی ہونے والی تھی جس کے لیے والدین بھی راضی تھے۔

تاہم دو روز قبل ڈاکٹر ویکاس کو انتہائی تشویشناک حالت میں اسپتال لایا گیا اور چند ہی گھنٹوں میں کومے میں چلے جانے کے بعد ان کی موت واقع ہوگئی۔

پہلے تو پولیس نے موت کو طبی قرار دیا تاہم جسم پر تشدد کے نشانات کے بارے میں پتہ چلنے پر تحقیقات کیں تو انکشاف ہوا کہ یہ طبی موت نہیں بلکہ قتل ہے۔

تفتیش کے لیے موبائل فون ڈیٹا سے مدد لی جس سے پولیس قاتل منگیتر تک پہنچنے میں کامیاب ہوگئی جس نے بتایا کہ انسٹاگرام پر میں نے اپنی برہنہ تصاویر دیکھ کر شک ویکاس سے پوچھا تو اس نے اعتراف کرلیا کہ صرف شغل کے لیے ایسا کیا۔

لڑکی کے بیان کے مطابق اس نے ویکاس کو سبق سکھانے کا فیصلہ کیا اور بہانے سے ایک پارٹی میں بلایا جہاں اسے نشہ آور چیز پلا کر اپنے دوستوں سے پٹوایا جس کے دوران ویکاس بے ہوش ہوگیا۔




اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں