یہ لباس مونچھوں کے بالوں سے تیار کیا گیا ہے - ایکسپریس اردو 43

یہ لباس مونچھوں کے بالوں سے تیار کیا گیا ہے – ایکسپریس اردو

اس لباس کا مقصد ’مومبر‘ کا سالانہ تہوار منفرد انداز سے منانا ہے۔ (فوٹو: پولیٹکس)

اس لباس کا مقصد ’مومبر‘ کا سالانہ تہوار منفرد انداز سے منانا ہے۔ (فوٹو: پولیٹکس)

ملبورن: آسٹریلیا میں مردانہ ملبوسات بنانے والی ایک کمپنی ’پولیٹکس‘ نے مردانہ مونچھوں سے بنا ہوا ایک کوٹ نمائش میں رکھا ہے جس کی تیاری میں وژول آرٹسٹ پامیلا کلیمین پاسی نے تعاون کیا ہے۔

تفصیلات کے مطابق، ہر سال نومبر میں ’’مومبر‘‘ (Movember) کا عالمی تہوار بھی منایا جاتا ہے جس میں دنیا بھر کے مردوں کو مونچھیں بڑھانے کی ترغیب دیتے ہوئے مردانہ صحت اور امراض کے بارے میں آگاہی دی جاتی ہے۔

ملبورن، آسٹریلیا کی ’پولیٹکس‘ (Politix) نے اس سال ’’مومبر‘‘ منانے کےلیے اعلان کیا کہ وہ پامیلا کلیمین پاسی کے تعاون سے ایسا کپڑا تیار کروا رہی ہے جو مکمل طور پر مردانہ مونچھوں پر مشتمل ہوگا۔

پامیلا اس منصوبے میں شمولیت کےلیے تیار تھیں کیونکہ ان کے شوہر کا انتقال بھی 2016 میں پروسٹیٹ کینسر سے ہوا تھا۔

کپڑے کےلیے مونچھوں کے بال فراہم کرنے کی ذمہ داری ’’سسٹین ایبل سیلونز‘‘ نے قبول کی جو آسٹریلیا میں سیلونز سے کاٹے گئے بالوں کی ری سائیکلنگ کا منصوبہ ہے۔

البتہ بہت سے دوسرے لوگوں نے بھی پامیلا کو براہِ راست مونچھوں کے بال بھیج کر اپنی دلچسپی کا اظہار کیا۔

پولیٹکس کے مطابق، مونچھوں کے بالوں سے لباس تیار کرنا کوئی آسان کام نہیں تھا کیونکہ پہلے مرحلے پر چھوٹے چھوٹے بالوں کو یکجا کرکے ایسے کپڑے کی شکل دینا تھا جو پہننے میں نرم و ملائم ہو جبکہ اس میں بالوں کی چبھن بھی نہ ہو۔

پامیلا نے یہ چیلنج بخوبی پورا کیا اور مونچھوں کے بالوں سے مطلوبہ خصوصیات کا حامل کپڑا تیار کرکے ’پولیٹکس‘ کے ڈریس ڈیزائنر کے سپرد کردیا۔

جلد ہی اس کپڑے سے ایک خوبصورت مردانہ سوٹ تیار کرکے نمائش میں رکھ دیا گیا جبکہ اس کی تصویریں سوشل میڈیا پر بھی شیئر کرائی گئیں جنہیں دیکھ کر کچھ لوگ حیرت زدہ ہیں تو کچھ کو گھن آرہی ہے۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں