نیب ترمیمی آرڈیننس کے خلاف درخواستوں پر وفاق اور نیب سے جواب طلب 27

نیب ترمیمی آرڈیننس کے خلاف درخواستوں پر وفاق اور نیب سے جواب طلب

نیب ترمیمی آرڈیننس کے خلاف درخواستوں پر وفاق اور نیب سے جواب طلب

لاہور ( ڈیلی پاکستان آن لائن )نیب ترمیمی آرڈیننس کے خلاف درخواستوں پر لاہور ہائیکورٹ نے وفاقی حکومت اور نیب سے جواب طلب کر لیا۔

لاہور ہائیکورٹ میں جسٹس شہباز رضوی کی سربراہی میں دو رکنی بینچ نے شہری اشتیاق چوہدری اور سعید ظفر کی درخواستوں پر سماعت کی،  درخواستوں میں وفاق اور چیئرمین نیب سمیت دیگر کو فریق بناتے ہوئے سپریم کورٹ کے فیصلوں کا حوالہ دیا گیا تھا ۔

  درخواست گزاروں نے مؤقف اختیار کیا کہ 8 اکتوبر 2021 کو وفاقی حکومت نے نیب ترمیمی آرڈیننس جاری کیا، ترمیمی آرڈیننس کی شقیں قانون سے مطابقت نہیں رکھتیں، کسی مخصوص شخص کے لئے آرڈیننس جاری ہونا خلاق قانون ہے، ریٹائرڈ ججز کی دوبارہ تعیناتی آزاد عدلیہ کے بھی خلاف ہے، اس لئے نیب ترمیمی آرڈیننس کو غیر قانونی قرار دیا جائے۔

 عدالت نے درخواستوں پر وفاق اور نیب سے جواب طلب کرتے ہوئے سماعت ملتوی کردی ۔

مزید :

اہم خبریں -قومی –

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں