باراتیوں پر ڈھول باجے کی تیز آواز سے مرغیوں کو ہلاک کرنے کا مقدمہ درج - ایکسپریس اردو 31

باراتیوں پر ڈھول باجے کی تیز آواز سے مرغیوں کو ہلاک کرنے کا مقدمہ درج – ایکسپریس اردو

تیز موسیقی کی وجہ سے مرغیوں کو دل کا دورہ پڑا، فوٹو: فائل

تیز موسیقی کی وجہ سے مرغیوں کو دل کا دورہ پڑا، فوٹو: فائل

دمشق: بھارتی ریاست اوڑیسہ میں 63 مرغیوں کی ہلاکت کو مالک نے شادی کے ڈھول باجے اور تیز موسیقی کو قرار دیکر ایف آئی آر باراتیوں کے خلاف درج کرا دی۔ 

بھارتی میڈیا کے مطابق اوڑیسہ کے رہائشی رنجیت کمار پریڈا نے ایک انوکھی ایف آئی آر درج کرائی ہے جس میں کہا گیا ہے کہ میری 63 مرغیاں مر گئی ہیں اور اس کی ذمہ دار گزشتہ شب ہونے والی شادی کی ایک تقریب ہے۔

ایف آئی آر میں کہا گیا ہے کہ آدھی شب کو ڈھول باجے اور کان پھاڑ دینے والی موسیقی کے ساتھ ایک بارات پولٹری فارم کے قریب سے گزر رہی تھی جس کی آواز سے میری 63 مرغیاں ہلاک ہوگئیں۔

پولٹری فارم کے مالک کے مطابق میرے ڈاکٹر نے بتایا کہ موسیقی کی تیز دھمک کی وجہ سے مرغیوں کو دل کا دورہ پڑا جس پر میں نے بارات کے منتظمین سے نقصان پر معاوضہ مانگا اور نہ دینے پر ایف آئی آر درج کرائی ہے۔

پولیس نے پولٹری فارم کے مالک کی درخواست پر باراتیوں کیخلاف ایف آئی آر درج کرلی ہے تاہم ابھی کوئی کارروائی نہیں کی گئی ہے۔

 

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں