آر او اور ایپلٹ ٹریبونل کے فیصلے قانون کے مطابق ہیں جمشید اقبال چیمہ کے کاغذات نامزدگی مسترد کرنے کیخلاف درخواست کا تفصیلی فیصلہ جاری 41

آر او اور ایپلٹ ٹریبونل کے فیصلے قانون کے مطابق ہیں جمشید اقبال چیمہ کے کاغذات نامزدگی مسترد کرنے کیخلاف درخواست کا تفصیلی فیصلہ جاری

آر او اور ایپلٹ ٹریبونل کے فیصلے قانون کے مطابق ہیں ، جمشید اقبال چیمہ کے …

لاہور ( ڈیلی پاکستان آن لائن )  لاہور ہائیکورٹ نے جمشید اقبال چیمہ کے کاغذات نامزدگی مسترد کرنے کے خلاف درخواست کا تفصیلی فیصلہ جاری کر دیا گیا، فیصلے میں کہا گیا کہ ریٹرننگ آفیسر اور ایپلٹ ٹریبونل کے فیصلے قانون کے مطابق ہیں ۔

جمشید اقبال چیمہ کے کاغذات نامزدگی مسترد کرنے کے خلاف درخواست کا تفصیلی فیصلہ جاری کر دیا گیا،لاہورہائیکورٹ کے جسٹس جواد حسن اور جسٹس مزمل اختر شبیر نے 19 صفحات پر مشتمل فیصلہ جاری کیا۔فیصلے میں کہاگیا کہ جمشید اقبال چیمہ نے کاغذات نامزدگی مسترد کرنے کے خلاف درخواست دائر کی ، درخواستگزار کے وکیل کے مطابق تجویز کنندہ کا ووٹ حلقہ این اے 133 میں تھا ، الیکشن کمیشن نے تجویز کنندہ کا ووٹ تبدیل کیا اور آگاہ بھی نہیں کیا،وکیل کے مطابق تجویز کنندہ کے گھرانے کے سارے ووٹ این اے 133 میں ہیں ، الیکشن کمیشن کے وکیل کے مطابق تجویز کنندہ کا تعلق بھی امیدوار کے حلقے سے ہونا ضروری ہے ، یہ درست ہے کہ تجویز کنندہ کا تعلق بھی امیدوار کے حلقے سے ہونا ضروری ہے، تجویز کنندہ اور امیدوار ایک ہی حلقے سے ہوں تاکہ امیدوار جیتنے کی صورت میں تجویز کنندہ کو جواب دہ ہوں ۔

عدالت نے تفصیلی فیصلے میں کہا کہ ریٹرنگ آفیسر اور ایپلٹ ٹریبونل کے فیصلوں میں کوئی لاقانونیت نہیں پائی گئی ، جمشید اقبال چیمہ کی کاغذات نامزدگی مسترد کرنے کے خلاف درخواست خارج کی جاتی ہے ۔

لاہور ہائیکورٹ نے اپنے فیصلے میں سپریم کورٹ کے فیصلہ جات کے حوالے بھی دیے ہیں ۔

مزید :

قومی -سیاست –

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں