mobile logo 27

آرٹیکل 63 اے کی تشریح پر نظرثانی کیلئے سپریم کورٹ بار نے درخواست دائر کر دی

آرٹیکل 63 اے کی تشریح پر نظرثانی کیلئے سپریم کورٹ بار نے درخواست دائر کر دی

اسلام آباد ( ڈیلی پاکستان آن لائن )  سپریم کورٹ بار نے آرٹیکل 63 اے کی تشریح پر نظرثانی کیلئے درخواست دائر کر دی، درخواست میں کہا گیا کہ  آرٹیکل 63 اے کی تشریح سے متعلق 17 مئی کی عدالتی رائے پر نظرثانی کی جائے۔

نجی ٹی وی ہم نیوز کے مطابق  سپریم کورٹ بار  نے آرٹیکل 63 اے کی تشریح پر نظر ثانی کیلئے دائر درخواست میں استدعا کی کہ  منحرف ارکان  کا ووٹ شمار نہ کرنے سے متعلق پیراگراف پر نظرثانی کی جائے،آرٹیکل 63 اے کے مطابق منحرف ارکان صرف ڈی سیٹ ہونگے،سپریم کورٹ کی رائے آئین میں مداخلت کے مترادف ہے۔

خیال رہے کہ  17 مئی کو  سپریم کورٹ آف پاکستان نے تین دو کی اکثریت سے آرٹیکل 63 اے کی تشریح کے صدارتی ریفرنس کا فیصلہ سنایا تھا ۔ سپریم کورٹ نے قرار دیا ہے کہ منحرف رکن کا ووٹ کاسٹ اور شمار نہیں ہوگا ،  صدارتی ریفرنس میں پوچھے گئے چوتھے سوال (منحرف ارکان کی نا اہلی کی مدت) کو سپریم کورٹ نے واپس صدرِ مملکت کو بھجوادیا ۔ 

سپریم کورٹ نے قرار دیا ہے کہ پارٹی پالیسی سے انحراف کرنے والے ارکان کی نا اہلی  کی مدت کیلئے قانون سازی کا اختیار پارلیمان کا ہے، اس حوالے سے قانون سازی کیلئے درست وقت یہی ہے۔

مزید :

اہم خبریں -قومی –

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں